پاکستان کے دو انتہائ قابل اور بہادر جرنل۔ راحیل شریف اور ڈی جی آئی ایس آئی رضوان اختر۔

Posted on October 10, 2017



پاکستان کے دو انتہائ قابل اور بہادر جرنل۔ راحیل شریف اور ڈی جی آئی ایس آئی رضوان اختر۔
پاکستانی قوم اور میڈیا ہر حاضر سروس شخص کو ہیرو اور ریٹائر ہونے پر تنقید ضرور شروع کردیتی ہے۔ یا پھر اپنے پسندیدہ لیڈر یا چینل کی دیکھا دیکھی تنقید کے نشتر برساتی ہے ۔ اگر شاید آپکو یاد ہو کراچی میں نامعلوم افراد ہوا کرتے تھے اور جنوبی اور شمالی وزیرستان میں دھشت گردوں کے خفیہ ٹھکانہ ، سندھ میں کرپشن کرنا پیپلز پارٹی اپنا حق سمجھتی تھی ۔ ان دو جرنیلوں کے آتے ہی نامعلوم افراد ہوں یا شمالی جنوبی وزیرستان کے دھشت گرد یا زرداری اینڈ کمپنی سب کو ہی چھپنے اور بھاگنے پر مجبور کردیا۔ جب تک یہ حضرات حاضر سروس تھے شاید آپکو یاد ہو الطاٖف حسین اور زرداری کا پاکستانی سیاست میں عمل دخل بند ہوچکا تھا ۔ اس وجہ سے ہی کافی ساری سیاسی اور مزہبی جماعتوں کی نظر میں یہ لوگ اچھے نہیں سوشل میڈیا پر ان افراد پر تنقید وہی لوگ کرتے نظر آتے ہیں جنکے سیاسی لیڈر ان بہادر جرنیلوں سے خوش نہیں ۔ اور کچھ سیاسی لیڈر صرف اس لیے ان سے خوش نہیں کے انکے مخالفوں کے خلاف انہیوں نے کاروائی نہیں کی اور انکی حکومت بنوانے میں تعاون نہیں کیا ۔ مگر وقت ثابت کرے گا اور کررہا ہے کے پاکستانی فوجی تاریخ میں ایسے بہت کم جرنیل گزرے ہیں جنہوں نے بیسوں سالوں کا گند صرف
تین سال میں ختم نہ صحیح مگر کم ضرور کردیا تھا