کرپٹ حکمرانوں کےلیئے”بابا نجمی” کا ایک شعر۔

Posted on February 18, 2017