سو لفظوں کی کہانیاں ۔۔۔ اکیاسی سے پچاسی

Posted on December 5, 2016



Dated: December 05, 2016
سو لفظوں کی کہانیاں ۔۔۔ اکیاسی سے پچاسی
تحریر: سید انور محمود
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سو لفظوں کی کہانی نمبر 81۔۔۔۔ دو ہنسوں کا جوڑا ۔۔۔۔۔۔
اکتوبر 2014 میں ستر روز کےبعد طاہر القادری اسلام آباد کےدھرنے
سے رخصت ہوئے تو عمران خان اور انکے درمیان بہت سے عہد و پیمان ہوئے
لیکن بعد میں دونوں کزنز میں دوری کی وجہ سے
ان کی محبت میں دراڑیں پڑنی شروع ہوگئیں
عمران خان نے دو نومبر2016 کو اسلام آباد میں
دھرنے کا پروگرام دیا جو یوم تشکر میں تبدیل ہوگیا
طاہرالقادری نے اپنے حامیوں کی شرکت سے صاف انکار کردیا
تین نومبر کو میڈیا کے سامنےدونوں کزنز کے بڑئے آپس میں لڑپڑئے
دور کہیں سے گانے کی آواز آرہی تھی
دو ہنسوں کا جوڑا بچھڑ گیو رے
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سو لفظوں کی کہانی نمبر 82۔۔۔۔ تحفے ۔۔۔۔۔۔
نواز شریف پانامہ لیکس کیس میں اپنے بچاوُ کےلیے ایک قطری شہزادے کا خط لے آئے ہیں
کامریڈ امیرجماعت اسلامی سراج الحق کو یہ بات بہت بری لگی
انہوں نے اپنی حسرتوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا
اب ہمیں تو تحفے میں کھجور اور آب زم زم کے سوا کچھ نہیں ملتا
لیکن حکمرانوں کو تحفوں میں اتنا سب کچھ کیسے مل جاتا ہے؟
اپنے پرانے دن یاد کرتے ہوئےانہوں نےکہا کہ کاش جنرل ضیاءالحق دوبارہ آجائے
تاکہ ہم اس کی بی ٹیم بنکر ایسے تحفے حاصل کرسکیں
امریکہ تو اب ہمیں جہاد کے نام پر ایک ڈالربھی نہیں دیتا
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سو لفظوں کی کہانی نمبر 83۔۔۔۔ سیب ۔۔۔۔۔۔
مسلم لیگ ن کے حامی شرافت کل بچے سے باہر ملے
بچے نے بتادیا کہ ابا کی طبعیت ٹھیک نہیں ہے
ملنے آئے تو ان کے ساتھ پلاسٹک کی تھیلی میں کچھ سیب تھے
بولے کمزور لگ رہے ہو کچھ کھایا پیا کرو
ہم نے سوچا سیبوں کو کھاکرکمزوری دور کرینگے
ہم نے پوچھا سیب کیا حساب ملے ، بولے بہت مہنگے ہیں
ہم نے کہا کہ پھر ہمارئے لیے لانے کی کیا ضرورت تھی
فورا بولے ارئے کس نے کہا یہ تو میں اپنے بچے کے لیے لایا ہوں
سیب اٹھائے اور جاتے ہوئے بولے یہ منہ اور سیب
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سو لفظوں کی کہانی نمبر 84۔۔۔۔اردو نہیں آتی ۔۔۔۔۔۔
میرئے سسر بہت سیدھے انسان تھے
انگریزی اور عربی زبان سے نابلد تھے
عمرہ کرنے آئے تو میرئے پاس ٹھیرئے
میں اور بچے گھر پر نہیں تھے تو ڈاکٹر نوری کا فون آیا
دونوں نے دیر تک بات کی، سسر صاحب نے بتایا کہ
کل مجھے تمارئے ساتھ کھانے پر بلایا ہے
اگلے دن ڈاکٹر نے بتایا کہ مجھے اردو نہیں آتی
کل وزیر اعظم نواز شریف نےامریکہ کے نو منتخب صدر ٹرمپ کو فون کیا
بقول وزیر اعظم ٹرمپ نے کہا کہ آپ جب چاہیں مجھے فون کرسکتے ہیں
ڈاکٹر نوری کی طرح ٹرمپ کو بھی اردو نہیں آتی
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سو لفظوں کی کہانی نمبر 85۔۔۔۔ڈنڈئے والے ۔۔۔۔۔۔
چھ سال بعد نئے استاد کوہیڈ ماسٹر بنایا گیا
انکےہاتھ میں ہر وقت ڈنڈا ہوتا تھا
پہلے میں بھی اسکول میں طالبعلموں کا صدر تھا
اپنے دوستوں اورخزانچی کے ساتھ ملکر اسکول کا مال ہڑپ کرلیتا،
لڑکوں کی فیسیں چوری کرلیتا اور بھی بہت کچھ کرتا تھا
میرئے کردار کے بارئے میں نئے ہیڈ ماسٹرکو پتہ تھا
ایک دن ہیڈ ماسٹر نے میرئے دوستوں کو پکڑ کر بہت مارا
میں نےہیڈماسٹر کے خلاف تقریر کی اور دھمکیاں دیں
تقریر کرکے میں اسکول سے بھاگ گیا
اب ڈنڈئے والے ہیڈ ماسٹر ریٹائر ہوگے ہیں
میں جلدہی واپس آونگا، آپکا سابق صدر