Motorway Police Ka Drama

Posted on September 12, 2016

موٹروے پولیس والا ڈرامہ ۔۔۔۔۔۔۔۔ !!!!

پاک فوج کے آفیسرز نے موٹروے پولیس کی گاڑی کو کراس کیا غالباً انکی سپیڈ اس وقت لمٹ سے زیادہ تھی۔ موٹر ویے پولیس نے گاڑی بھگا کر ان کی گاڑی کے آگے بریکس لگوا کر انکو روکا اور انکی گاڑی سے چابیاں کھینچ لیں۔
پاک فوج کے دونوں آفسیرز نے اپنا تعارف کرایا جیسا کہ معمول ہے تو موٹروے پولیس کے اہلکار نے سخت بدتمیزی سے کہا کہ ” تم جیسے بہت سے افسر دیکھے ہیں ”
تب فوجی آفیسر نے کہا ” آپ کو تمیز سے بات کرنی چاہئے ”
اس بات پر موٹر وے اہلکار بھپر گئے اور آرمی آفیسر کو گالیاں دینے لگے اور مارنے لگے۔ ان کے کچھ اور ساتھی بھی آگئے۔ وہ تعداد میں کل 7 تھے جبکہ وہ فوجی آفیسر صرف 2 تھے۔
موٹروے پولیس نے دونوں آفیسرز کو حراست میں لے لیا۔ معاملہ سلجھانے اٹک قلعے کے ٹو آئی سی صاحب خود پہنچے۔ وہاں کچھ تلخ کلامی ہوئی۔
اس موقعے پر تھانے میں ڈی آئی جی اور سی او صاحب موجود تھے۔ فیصلہ یہ ہوا کہ معاملہ اٹک قلعے میں طے کیا جائے۔
ڈی آئی جی پولیس اور سی او اٹک کی زیر نگرانی یہ سارے اٹک قلعے میں گئے اور وہاں معاملہ ختم کر دیا۔ اس سارے عرصے کے دوران موٹروے پولیس کے آئی جی صاحب ان سے مسلسل رابطے میں رہے۔
اسی رات سی او اٹک صاحب کو خبر ملی کہ ” کہ کسی خٹک صاحب نے پاک فوج کے خلاف ایف آئی آر کاٹ دی ہے جس میں جھوٹی اور من گھڑت کہانیان ڈالی گئی ہیں۔ ” دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ موصوف اس سارے واقعے میں کہیں بھی موجود نہیں تھے۔ صرف سستی شہرت کے لیے ایک ایسے واقعے کی ایف آئی آر کاٹ دی جس کو خود آئی جی موٹر وے پولیس اور ڈی آئی جی پولیس نے اپنی نگرانی میں حل کر لیا تھا۔ یہ ہے اس سارے ڈرامے کی اصل حقیقت۔

مریم نواز کی نگرانی میں چلنے والے سوشل میڈیا پیجز پر اس معاملے کو خوب اچھالا جا رہا ہے اور اس کے لیے مشہور زمانہ ” جیو نیوز” کی خبر کی سکرین شاٹ بھی چلائی جا رہی ہیں۔ نوٹ کیجیے کہ یہ خبر کسی اور چینل پر موجود نہیں۔

اس قسم کے بےہودہ ڈارمے بازیوں سے پاکستان دشمن عناصر لوگوں کے دلوں سے پاک فوج کی محبت کو نہیں نکال سکتے جو انہوں نے اپنی جانیں دے کر کمائی ہے لیکن اتنا ضرور ہے کہ فوجی جوانوں کے دلوں کو ٹھیس پہنچا سکتے ہیں

2nd side of the story,

The complete details. Fol happened:-
– The two officers were driving and crossed motorway police car. Must have driven rashly or sth.
– The motorway police came infront of them, applied brakes and came and took out keys of the car.
– He told he is an Army officer so the guy said I have seen many like you and started abusing him and the Army. This SI Khattak, whoever he is, is relative of some general and he started beating and abusing and all.
– The second officer also was abused and beaten in the same time. Total manpower of motorway police was 7.
– 2IC from Attock fort went, who is one of the most mature officers that I have personally met in life, and tried to resolve the issue, however, some manhandling happened from both sides during this period.
– CO and DIG were personally present when all were taken to Polics Station. However, it was decided to resolve the issue amicably at Attock Fort. (So all went there in supervision of DIg and CO Attock Fort). IG motorway police was in telephone contact with CO Attock fort during this period.
– The issue was resolved however, that same night CO Attock fort came to know that SI Khattak who was not even involved had launched an FIR personally against Army with all fabricated stories. This speaks very low of the indl and if NH&MP was involved in this (After resolving the issue in presence of DIG) then it amounts to shameful behavior on part of that org and an attempt to malign the institution of Army.
– This SI Khattak sth was not even the one who was manhandled. He is just trying to get his 5 mins of Fame out of this issue.
– Therefore, please share this info to all Because The info is correct and cfm from first hand source.

Videos Going Viral

Maulana Tariq Jameel Junaid Ja
Police Took big Action Against
Eight To Nine Passengers Jumpe
Australia XI All Out For Just
MQM Workers Ki Jhanda Lagane K
Usman Dar Offered Imran Khan h
Junaid Jamshed Nawaz Sharif Au
Shahid Masood Reveals What Pml
Junaid Jamshed’s Last Vo
Maulana Tariq Jameel Reveals W