لاھوری دوست کے نام

Posted on August 11, 2016



لاھوری دوست کے نام۔۔۔۔
میرے ایک لاھوری دوست نے شکایت کی ھے کی پاکستان
میں کچھ اچھا بھی ھے اس کے بارے میں بھی لکھو۔ تو آج میں پاکستان کے لوگوں کی کچھ اچھی باتیں لکھ رہا ھوں۔
۔ پاکستانیوں کا مثالی اتفاق اور اتحاد ۔ پاکستانی لوگ اتنے متحد ھیں کہ اگر غلطی سے محکمہ برقیات کا کوئی ایکہ دوکا ایمان دار ملازم کسی محلے میں بجلی چوری کرنے کے کنڈے اتارنے چلا جاے تو تمام اھل محلہ مثالی اتحاد کا مظاہرہ کرتے ھوے یک جان ھو کر اس کے نہ صرف کھنے سکیں گے بلکہ اس کی گاڑی کو بھی آگ لگا دیں گے۔ اور پھر متحد ھو کر سڑکوں پر ٹائر جلائیں گے۔ اس معاملے میں تو وہ پولیس کے خلاف بھی بھرپور اتحاد دکھاتے ھیں اور اگر بھولے سے وہ کسی مجرم کو گرفتار کرنا چاہیے تو اس کو بھی اتحاد کی برکت سے مار بگاتے ھیں ۔

۔ ملاوٹ سے نفرت۔ پاکستان کے گوالے اتنے ایماندار ھیں کہ باقی سار سال جو دل چاہے کریں لیکن داتا کے عرس پر انتہائی خالص دودہ عوام کو مفت میں پلائیں گے۔ جس کو ان کے پیٹ برداشت نہیں کر سکیں گے اور خراب ھو جائیں گے۔ عوام الناس کو خرابی صحت سے بچانے کیلئے ان کے وسیع تر مفاد میں وہ مجبوری میں دوبارہ پانی ملا دودھ فروخت کریں گے۔

صفائی سے محبت۔ پاکستانیوں کو صفائی سے بہت پیار ھے ھمیشہ جب بھی گھر کی صفائی کریں گے تو کوڑا باھر گلی میں پھنکتے ھوے پوری احتیاط کریں گے کہ وہ یا تو پڑوسی کے گھر کے آگے ھو یا پھر گٹر میں ۔ پاکستانیوں میں جذبہ خدمت اور فلاحی کاموں کا شوق بھی کوٹ کوٹ کر بھرا ھوا ھے اس لیے کچھ لوگ اپنے بھائیوں کی آسانی کے لیے کہ انہیں گٹر میں کوڑا پھنکنے میں تکلیف نہ ھو گٹروں کے فضول ڈھکنے اتار کر ان
کے لیے آسانی پیدا کرتے ھیں۔
۔ آرٹ اور فنون لطیفہ سے پاکستانیوں کو عشق ھے۔ آپ کو ھر پبلک پلیس کی دیواروں اور فرشوں پر آرٹ کے نادر نمونے کثرت سے ملیں گے۔ اس فن میں پاکستانی اتنے ماھر ھیں کہ وہ پان کی پیک اور تھوک کے استمال سے بھی بڑی نادر تخلیقات بنا لیتے ھیں ۔ اس کے علاوہ آپ کو پبلک واش رومز میں شاعری اور نصیحتوں کے اعلٰی نمونے بھی جا بجا ملیں گے۔

۔ پاکستانی طرح طرح کے کھانے بہت شوق سے کھاتے ھیں کھانے پینے کی دکانیں اس کثرت سے ھیں کہ گندے نالے، فوٹھ پاتھ، سڑکیں، اور پل بھی ان سے محفوظ نہیں ۔ لاھور شہر کے سب سے مشہور دھی بڑوں کی ریگل چوک کی دکان کے نیچے بھی گندا نالا بہتا ھے۔ اور تو اور پاکستانی ھوٹلوں میں کواوں، چیلوں اور گدھوں تک کا گوشت مزے لے لے کر کھا جاتے ہیں ۔
۔ وقت کی پابندی بھی پاکستانیوں پر ختم ھے۔ پابندی وقت کی خاطر وہ نہ تو سرخ بتی پر رکتے ہیں اور نہ سڑک پر لین میں گاڑی چلانے کی فضولیات میں پڑتے ہیں بلکہ ھر کوئی وقت کی پابندی کی خاطر دوسرے کو دائیں بائیں جہاں سے موقع ملے پیچھے چھوڑ دیتا ھے۔
۔ پاکستانی انتہائی شریں کلام اور بےتکلف ھوتے ھیں اور دشمن اور دوست دونوں کی ماں بہن کو القابات سے نواز کر اپنی بےتکلفی اور محبت کا ثبوت پیش کرتے ھیں ۔