فیس بک پر دوستی کو پیار میں بدلنےسے پہلے اس لڑکی کا انجام ضرور پڑھ لیجیے

Posted on July 30, 2016








ماسکو (ویب ڈیسک) آج کل کی نوجوان نسل انٹرنیٹ اور فیس بک کے چکر میں اپنا وقت برباد کرنے کے ساتھ ساتھ الٹے سیدھے چکروں میں پڑجاتی ہے اور یہ کام پوری دنیا میں پھیل چکا ہے ۔ اگرچہ فیس بک اور انٹرنیٹ و دیگر سوشل میڈیا سائیٹس لڑکوں کے لئے بھی کچھ کم پر خطر نہیں لیکن انٹرنیٹ پر محبت کی متلاشی لڑکیوں اور خواتین کے ساتھ کیا ہو سکتا ہے، اس کا اندازہ روس میں پیش آنے والے اس بھیانک واقعہ سے لگایا جا سکتا ہے۔میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق انٹرنیٹ کے ذریعے محبت کی تلاش کرنے والی ایک روسی لڑکی کو ایک سوشل میڈیا ویب سائٹ پر پیار تو مل گیا مگر پہلی بار لڑکی جب لڑکے سے ملنے اس کے فلیٹ پر گئی تو اجنبی ’دوست‘ نے اس کا سر تن سے جدا کردیا۔ ایکاترین برگ شہر سے تعلق رکھنے والی کرسٹینا میدے دیوا ایک دکان میں اسسٹنٹ کے طور پر کام کرتی تھی۔ روسی پولیس کا کہنا ہے کہ 22 سالہ کرسٹینا کے لاپتہ ہونے کے تین دن بعد اس کی سرکٹی لاش ملی۔رپورٹ کے مطابق کرسٹینا تلیتسا شہر سے نئی زندگی اور محبت کی تلاش میں ایکا ترین برگ شہر میں آئی تھی۔ وہ اپنی ایک سہیلی کے ساتھ کرائے کے فلیٹ میں رہ رہی تھی اور 24 جولائی کو انٹرنیٹ پر ملنے والے ایک اجنبی کے ساتھ باہر گئی تھی۔اس لڑکی کے اندوہناک قتل نے سوشل میڈیا پر خواتین کو لاحق خطرات کی بحث ایک بار پھر چھیڑ دی ہے۔ روسی حکام کا کہنا ہے کہ انٹرنیٹ کے ذریعے نوعمر لڑکیوں اور خواتین کو نشانہ بنانے والے درندوں کا سراغ لگانے کے لئے ایک نیا نظام وضع کرنے پر غور کیا جارہا ہے تاکہ اس طرح کے عاقعات کی روک تھام کی جا سکے۔

Source:- http://hassannisar.pk/international_25431.html

loading...