قائداعظم اور نواز شریف

Posted on July 19, 2016








بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کو ٹی بی کی مہلک بیماری تھی جسکا علاج اس وقت پاکستان میں نہیں تھا۔ قائداعظم نے علاج کے لیے لندن جانے سے انکار کر دیا کہ ” میری مملکت اس خرچے کی متحمل نہیں ہوسکتی “۔۔۔ اور موت کو گلے لگا لیا!

جب سے پانامہ لیکس کا ایشو اٹھا ہے نواز شریف کو یک بیک ایسے عارضے لاحق ہوگئے ہیں جنکا علاج صرف اور صرف لندن میں ہی ممکن ہے!

پہلے پیٹ میں میں تکلیف ہوئی جس کے علاج کے لیے سپیشل جہاز سے لندن تشریف لے گئے!

اس کے کچھ دن بعد اچانک سینے میں تکلیف ہوئی جس کے علاج کے لیے دوبارہ نہ صرف سپیشل جہاز سے لندن تشریف لے کر گئے بلکہ واپسی کے لیے بھی پاکستان سے ” خالی جہاز” لندن منگوایا !

سنا ہے اب ٹانگ میں تکلیف ہے جسکی وجہ سے ان کے لیے اسلام آباد کا سفر ممکن نہیں چنانچہ علاج کے لیے دوبارہ لندن کا سفر ناگزیر ہو چکا ہے!

ویسے بہت سوں کو یقین ہے کہ قائداعظم کو جو ٹی بی ہوئی تھی اسکا علاج بے شک پاکستان میں نہیں تھا اس کے باوجود نہیں گئے لیکن نواز شریف کو جتنی بھی یبماریاں ہیں انکا پاکستان میں ” شافی علاج ” موجود ہے!

تحریر شاہدخان