اگلے سو سال تک کوئی قندیل بلوچ پیدا نہیں ہوگی،قتل ہونیوالی ماڈل کا آخری بیان منظر عام پر آگیا

Posted on July 17, 2016








svv

ملتان(ویب ڈیسک)یہ حقیقت ہے کہ جو لوگ قندیل بلوچ کی زندگی میں اسے برا بھلا کہتے تھے وہ بھی قندیل بلوچ کی اچانک بے بسی کی موت پر افسوس کا اظہار کر رہے ہیں ۔ ایک طرف جہاں لاکھوں نوجوان قندیل بلوچ کو پسند کرتے تھے وہیں پر بے شمار لوگ قندیل کے رویوں کو تنقید کا نشانہ بھی بناتے تھے ۔ ان ہی لوگوں کے بارے میں قندیل بلوچ نے اپنی زندگی کا آخری بیان دیا۔ سوشل میڈیا پر موجود اس بیان میں قندیل بلوچ کا کہنا تھا کہ مجھے پتہ ہے آپ لوگ میرے مرنے کی دعا مانگتے ہیں لیکن یاد رکھیے اگر میں مر گئی تو آپ مجھے بھلا نہیں سکیں گے اور اگلے سو سال تک قندیل بلوچ جیسی لڑکی آ پ کے معاشرہ میں پیدا نہیں ہو گی ملتان میں قتل کی جانے والی معروف ماڈل قندیل بلوچ کا اپنی زندگی میں دیا گیا آخری بیان سامنے آگیاہے۔ یہ بیان انہوں نے سوشل میڈیا کی ویب سائٹ ٹویٹر پر دیا۔
ایکسپریس نیوزکے مطابق قندیل نے ٹوئٹرپرگزشتہ روز اپنے آخری بیان میں خواتین کے لیے کہا تھا کہ ان کے لیے ایک عام لڑکی سے ایک خود مختارعورت بننے کا سفر آسان نہیں تھا، زندگی نے انہیں جلدی ہی بہت سے سبق سکھادیئے ہیں۔اس نے اپنے ٹویٹ میں مزید کہا کہ خواتین ہونے کے ناطے نہ صرف ہمیں اپنے بلکہ دوسروں کے لیے بھی کھڑا ہونا چاہیے ۔

Source