جنرل راحیل شریف کے بعد اگلا آرمی چیف کون ہو گا؟سنیارٹی لسٹ سامنے آگئی

Posted on July 14, 2016

لاہور(ویب ڈیسک) موجودہ چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف کے ساتھ ساتھ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود کے عہدہ کی معیاد 29نومبر 2016ءکو ختم ہورہی ہے ۔مگر اس سے پہلے نئے چیف آف آرمی سٹاف اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کا تقرر قانونی و آئینی ضرورت ہے۔ چیف آف آرمی سٹاف کی طرف سے اسی سال کے آغاز میں25جنوری کو واضح کردیا گیا تھا کہ وہ اپنی مدت ملازمت میں توسیع لینے کے خواہش مند نہیں ہیں ،ان کی طرف سے اپنی مدت ملازمت میں توسیع لینے سے انکار کی بابت آئی ایس پی آر کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ کی طرف سے باضابطہ اعلان بھی کیا جاچکا ہے ۔آئین کے آرٹیکل 243(4)کے تحت چیئر مین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی اور چیف آف آرمی سٹاف کے علاوہ فضائیہ اور بحریہ کے سربراہوں کا تقرر وزیراعظم کی ایڈوائس پر صدر مملکت کرتے ہیں ،آئینی طور پریہ وزیراعظم کا صوابدیدی اختیار ہے کہ وہ لیفٹیننٹ جنرلز میں سے جنہیں چاہیں آرمی اور جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کے سربراہ مقرر کرنے کی ایڈوائس دے دیں جس پر عمل درآمد کے صدر مملکت پابند ہیں ۔جنرل راحیل شریف اور جنرل راشد محمود کی ریٹائر منٹ کے بعد سنیارٹی لسٹ کے مطابق جن جرنیلوں میں سے چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی اورچیف آف آرمی سٹاف تعینات ہونے کا امکان موجود ہے ان میں لیفٹیننٹ جنرل مقصود احمد ،لیفٹیننٹ جنرل زبیر محمود حیات کے علاوہ لیفٹیننٹ جنرل اشفاق ندیم ،لیفٹیننٹ جنرل ضمیر الحسن شاہ ،لیفٹیننٹ جنرل جاوید اقبال رمدے اورلیفٹیننٹ جنرل قمر جاوید باجوہ شامل ہیں ، لیفٹیننٹ جنرل سید واجد حسین ، لیفٹیننٹ جنرل نجیب اللہ خان بھی سنیارٹی لسٹ میں تیسرے اور چوتھے نمبر پر موجود ہیں تاہم دونوں اس وقت کسی آپریشنل کور کی سربراہی نہیں کررہے ۔لیفٹیننٹ جنرل سید واجد حسین ہیوی انڈسٹریز ٹیکسلا کے سربراہ ہیں جبکہ لیفٹیننٹ جنرل نجیب اللہ خان کا تعلق آرمی کی انجینئرز کور سے ہے ۔ان لیفٹیننٹ جنرلوں میں سے 4لیفٹیننٹ جنرلزلیفٹیننٹ جنرل مقصود احمد ،لیفٹیننٹ جنرل زبیر محمود حیات ،لیفٹیننٹ جنرل سید واجد حسین ، لیفٹیننٹ جنرل نجیب اللہ خان کے موجودہ عہدوں کی میعاد13جنوری 2017ءکو ختم ہورہی ہے جبکہ لیفٹیننٹ جنرل اشفاق ندیم ،لیفٹیننٹ جنرل ضمیر الحسن شاہ ،لیفٹیننٹ جنرل جاوید اقبال رمدے اورلیفٹیننٹ جنرل قمر جاوید باجوہ کے موجودہ عہدوں کی میعاد 8اگست 2017ءکو پوری ہورہی ہے ۔سال رواں میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود اور چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف کے سوا کوئی جرنیل ریٹائر نہیں ہورہا تاہم اگر مذکورہ لیفٹیننٹ جنرلزمیں سے کوئی جونیئر ان دونوں عہدوں میں سے کسی ایک پر تعینات ہوجائے تو اس سے سینئر جنرل عسکری روایات کے تحت اپنے عہدوں سے سبکدوش ہوجائیں گے ۔اس وقت مقصود احمد سینئر ترین لیفٹیننٹ جنرل ہیں جو اقوام متحدہ کے امن آپریشنز ڈیپارٹمنٹ میں ملٹری ایڈوائزر کے طور پر تعینات ہیں ،اطلاعات کے مطابق وہ اسی سال ستمبر میں واپس آرہے ہیں جس کے بعد ان کے نام کا جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کے چیئرمین کے لئے لیا جانا خارج ازامکان نہیں ۔لیفٹیننٹ جنرل زبیر محمود حیات کا سنیارٹی لسٹ میں دوسرا نمبر ہے اورانہیں چیف آف آرمی سٹاف مقرر کئے جانے پر غور ہوسکتا ہے ،وہ اس وقت چیف آف جنرل سٹاف کے طور پر کام کررہے ہیں ۔(ان کے دو بھائی بھی جنرل کے عہدوں پر فائز ہیں ،جن میں سے لیفٹیننٹ جنرل عمر محمود حیات آرڈیننس فیکٹریز کے چیئرمین اور میجر جنرل احمد محمود حیات ڈائریکٹر انیلسز آئی ایس آئی کے طور پر کام کررہے ہیں )جبکہ تیسرے سینئر ترین لیفٹیننٹ جنرل سید واجد حسین ہیوی انڈسٹریز ٹیکسلا کے چیئرمین کے عہدہ پر تعینات ہیں ،وہ آرمرڈ کور کے کرنل کمانڈنٹ بھی ہیں ۔سنیارٹی لسٹ میں چوتھا نمبر لیفٹیننٹ جنرل نجیب اللہ خان کا ہے جن کا تعلق انجینئر زکور سے ہے اور وہ ڈی جی جوائنٹ سٹاف اور انجینئرز کور کے کرنل کمانڈنٹ کے طور پر بھی کام کررہے ہیں ۔

Source:- http://hassannisar.pk/pakistan_21610.html

Videos Going Viral

Sialkot Mian Pilot Jahaz Chor
Haroon Rasheed’s Analysi
People Came Out Against Qatari
Maulana Tariq Jameel Junaid Ja
Police Took big Action Against
Eight To Nine Passengers Jumpe
Australia XI All Out For Just
MQM Workers Ki Jhanda Lagane K
Usman Dar Offered Imran Khan h
Junaid Jamshed Nawaz Sharif Au