وزیراعظم کا لاو لشکر اور جنرل اسمبلی سے خطاب۔۔۔

Posted on October 2, 2015



وزیراعظم کا لاو لشکر اور جنرل اسمبلی سے خطاب۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ملک ریاست

وزیراعظم پاکستان کا اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب بلاشبہ جرات مندانہ تھا۔۔۔ اور وزیراعظم کی باڈی لینگج سے پتہ چل رہا تھا کہ وہ یہ سب کچھ دل و دماغ سے کہہ رہے ہیں۔۔۔۔ اپنے خطاب کے دوران ورزیراعظم نے کشمیر اور فلسطین کے مسئلے کو عالمی برادری کے سامنے احسن طریقے سے پیش کیا اور اس کے حل کی تجویز بھی پیش کی ۔۔ یہ ایک بہت خوش آئند اقدام ہے پر انڈیا کی وزیرخارجہ اسے اپنی تقریر میں مسترد کر چکی ہیں ۔۔ یاد رہے کہ یہ تجویز اس سے پہلے پرویز مشرف بھی دے چکا ہے ۔۔۔۔
اور کچھ دوست اس وجہ سے تنقید کر رہے ہیں کہ تقریر اردو میں ہونی چاہیے تھی۔۔۔بحرحال اگر اردو میں ہوتی تو بہت اچھا ہوتا لیکن اگر نہیں بھی کی کوئی بات نہیں ۔۔۔۔ تقریر میں دم تھا۔۔ اس پر ہم راحیل شریف اور نواز شریف دونوں کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔
تقریر میں تو کوئی شک وشبہ نہیں کہ ٹھیک اور حقائق پر مبنی تھی پر کیا یہ تقریر اتنی مشکل یا بہت بھاری تھی کہ وزیراعظم کو اپنے ساتھ 73 افراد لے کے جانے پڑے۔۔۔
ایک ایسا ملک جو تقریبا غیرملکی امداد اور ائی ایم ایف کی قسطوں پر چلتا ہو۔۔۔ جہاں غریب بھوکا مر رہا ہو، ملک میں لوڈشیٹنگ کا یہ عالم ہو کہ عید کے دن میں بھی اندھروں سے نجات نہ مل سکے۔۔ پسماندگی اور جہالت میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہو رہا ہو۔۔۔اس غریب ملک کے وزیراعظم کو اتنے افراد لے جانے کی کیا ضرورت آن پڑھی تھی۔۔۔۔ کیا ایسی گمھبیر صورتحال میں ایسی عیاشی زیب دیتی ہے۔۔۔
افسوس تو اس بات کا ہے 10 دن سے مسلسل دیکھ رہا ہوں سوائے 2، 3 ملکوں کے سربراہوں کے وزیراعظم نے کسی سے ملاقات تک نہیں کی ۔۔ نہ تو یہ اتنا بڑا وفد کسی بزنش کمونٹی سے ملا نہ کوئی معائدہ ہوا، اگر کسی سے ملنا نہیں تھا تو اتنا بڑا لاّو لشکر کس کام کے لیے گیا تھا۔۔۔
خدارا میاں صاحب اس غریب پر رحم کرو۔۔۔ اور وہ لوگ جو میٹرو یا چند سڑکوں کو لے کر ان کی اندھی تقلید میں دن و رات ایک کیے ہوئے ہیں وہ بھی ہوش کے ناخن لیں۔۔ اور اپنے اور عوام پر مہربانی فرماییں شکریہ