DAHSHATGIRI K ASBAAB

Posted on September 22, 2015



ویسی تو ہر کوئی دھشتدگرد کو اپنی اپنی مذہب سے نکال دیتا ہے یہ کہہ کر کے ہمارا مذہب اس چیز کی ہر گز اجازت نہیں دیتا کہ تم بے قصور انسانوں کا خون بہاؤ ۔۔ اور یہ صحیح بہی ہے۔۔
مگردھشتدگرد بننی کے اسباب کیا ہیں یہ بہی غور طلب بات ہے۔۔میری حساب سے دھشتگرد انسان کو ہمارہ معاشرہ ہی بناتا ہے۔اگر ایک شخس رات دن محنت کر کے نوکری نہ لے سکی اور کوئی بغیر محنت کے بغیر قابلیت کے سفارش لگا کے نوکری لیلئے تو اگلا بندہ کیا کرے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!!!!۔!!
>اگر ایک شخس کا قریبی رشتیدار اسپتال میں اس وجہ سے مرجائے کے اس نے ڈاکٹر صاحب کو سفارش نہیں لگائی اور نہ ہی اس کے پاس اتنا پئسہ ہو کے ڈاکٹر صاحب کے پرائویٹ ہسپتال میں علاج کرا سکے تو اگلا بندہ کیا کرے!!
>اگر ایک شخس کو انصاف کے لئے پولیس کے پاس جانا پڑی اور پولیس الٹا اس پہ کیس کر کے حوالات کے اندر کردے اور وہ ایک جہوٹی کیس میں جیل میں رگڑتا رہے اور با اثر لوگ ہر گناہ کر کے بہی آزاد گہومتی رہیں تو اگلا بندہ کیا کرے!!
>جہاں ایک غریب کا بچہ رات دن محنت مزدوری کرنے ساتھ ساتھ پڑہے لکھے اور امتحانات میں اچہی نمبر نہ لاسکے اس لئے کہ اس کی بورڈ میں کوئی سفارش نہ تھی اور ایک امیر کا پچہ رات دن عیاشی کرنے کے بعد بہی سفارش کرواکے مارکس لیلئے تو بندہ کیا کرے۔۔۔۔۔۔!!!
جس معاشری میں مساوات نہیں ہوتیں وہاں جرم اپنی “جگہ” بنا ہی لیتا ہے۔۔۔