پپلزپارٹی

Posted on September 1, 2015



پپلزپارٹی۔۔۔۔۔ ملک ریاست
پی پی ایک سیاسی جماعت سے ہٹ کر اب صرف بدعنوان عناصر کا ٹولہ بن چکی ہے ۔۔۔۔ میرا نہیں خیال کہ پوری جماعت میں چند ایک کے سوا ایسا کوئی ہو گا جو کربٹ نہیں ہو گا۔۔۔۔ یہ سارے ہی بدعنوان ہیں اس کے بنیادی وجہ یہ ہے کہ ان کا سربراہ زرداری خود پورے ملک کا سب سے بڑا فراڈی اور کرپٹ آدمی ہے ۔۔۔ جب سربراہ ہی کرپٹ ہو گا تو نیچے والوں کا اللہ ہی حافظ ہو گا۔۔۔۔
بینظیربھٹو کی موت کے بعد پاکستان پیپلز پارٹی کی 2008ء سے 2013ء کی مرکزی حکومتوں میں آصف زرداری، اُن کے دو وزرائےاعظم اور وفاقی اور صوبائی وزرا نے مل کر کرپشن اور بدانتظامی کے حوالے سے ماضی کےتمام ریکارڈ توڑڈالے ۔ کھربوں روپے کی کرپشن کر کے قومی خزانے کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا اورملکی معیشت کو مفلوج بناڈالا۔ جو کسی طرح سے بھی ابھی تک نہیں سبھل سکی۔۔۔
جب سے پی پی وجود میں آئی اس کے بعد مسلسل سندھ میں حکومت کر رہی ہے۔۔۔۔۔ ۔۔انھوں نے ہر ہر محکمے میں کرپشن کر کر کے اس کی ستایاس کر دی ۔۔۔ لیکن ابھی تک ان کے پیٹ نہیں بھرے۔۔۔ 90 سالہ سائیں کو صوبے کا وزیراعلی بنایا ہوا ہے ۔۔۔ اس عمر میں بندے کو اپناہوش نہیں ہوتا وہ بچارہ اتنا بڑا صوبہ کیسے کنٹرول کر سکتا ہے۔۔۔
آپ پورے صوبے میں دیکھے کہیں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں نظر آتی ۔۔۔ تھر میں سینکٰڑوں بچے غزائی قلت سے تڑپ تڑپ کے مرگئے۔۔ لیکن حکومت انھیں غذا فراہم نہیں کر سکی۔۔۔
پندوستانی تاریخ کے پہلے فوجی حکمران شیر ساہ سوری نے اپنے 5 سالہ حکومت میں حسن ابدال سے ہندوستان تک سڑک تعمیر کروائی ۔۔۔ اور ان سے 35 سال میں نہ تو کوئی دھنگ کا ہسپتال بن سکا ۔۔۔ نہ کوئی تعلیمی ادارہ بن سکا نہ روڈیں بن سکیں ۔۔۔اور نہ ہو کوئی اور کام ہو سکا۔۔۔ ماسوائے اداورں کو تباہ کرنے ۔۔۔ کرپشن کرنے۔۔۔ ملکی پیسے کو بیرون ملک لے جانے کے ۔۔۔۔۔۔۔
غریب بھوک سے مر گیا ان کو کھانے کے لیے روٹی میسر نہیں۔۔۔ ان کے بدن پر کپڑےمیسر نہیں ۔۔۔ ان کے بچے تعلیم حاصل نہیں کر سکتے ۔۔۔ سکولوں پےوڈیروں نے قبضہ کرکے وہاں اپنی بھینسین باندھ رکھی ہیں۔۔۔ لیکن اس کے باوجود بھٹو زندہ ہے اور غریب مرتا رہے گا بھٹو زندہ رہے گا۔۔۔ان بیچاروں ، مسکینوں لاچاروں کے لیے ان کے پاس پیسے نہیں لیکن” ایک چور سابق وزیر ڈاکڑ عاصم کو چھوٰڑنے کی صورت میں پی پی نے فوج کو 2 بلین ڈالڑٰ کی پیشکش کی ہے”

محترم اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ کہتے ہیں کہ” اگر زرداری پے ہاتھ ڈالا گیا تو جنگ ہوگی”۔۔۔ شاہ جی افسوس تو یہ ہے کہ اگر پہلے ہاتھ ڈالا جاتا تو آپ میٹر ریڈر سے اپوزیشن لیڈر نہ بنتے۔۔۔ یہ ملک آپ کا یہ زرداری کے باپ کا نہیں کہ آپ جو مرضی ہے کرتے پھیریں لیکن آپ کو کوئی پوچھے نہیں ۔۔۔بے شرمی کی بھی حد ہوتی ہے لیکن افسوس کے پی پی میں وہ بھی نہیں رہی۔۔۔۔
میں موجودہ گورنمنٹ کی تعریف نہیں کررہا ۔۔۔۔ لیکن اس کےباوجود کوئی نہ کوئی کام ہوتا نظر آ رہا ہے ۔۔۔ ادارے متحرک ہیں ۔۔ اور اپنا اپنا کام کرتے نظر ا رہے ہیں۔۔۔ ملک میں سڑکیں اور پل تعیر ہو رہے ہیں ۔۔۔۔ لیکن اس کے پرعکس پی پی کا دور حکومت اللہ دوبارہ نہ لائے۔۔ اس جیسی بے حس حکومت کسی نے نہیں دیکھی ہو گی ۔۔۔ چاہیے جو کچھ مرضی ہے ہوجائے لیکن حکومت کے کان میں جوں تک نہیں رینگتی تھی۔۔۔ اخر میں قائرہ صاحب اتنی خوبصورتی سے پریس کانفرنس کرتےکہ زرداری اور اس حکومت سے بڑے فرشتے تو کبھی پیدا ہی نہیں ہوئے۔۔۔ شکریہ

Videos Going Viral