Namrood, Nawaz Shareef aur Ham

Posted on August 28, 2013



اسلام آباد…وزیر اعظم میاں نواز شریف نے سزائے موت پانے والے 468 قیدیوں کی سزا پر عمل درآمد روک دیا ہے۔ان میں دہشت گرد اور فوجی عدالتوں سے سزا پانے والے مجرم شامل نہیں ہیں۔ذرائع وزارت داخلہ کے مطابق وزیر اعظم نے صدر سے مشاورت کے بعد تاحکم ثانی قیدیوں کی سزا پر عمل درآمد روکنے کا حکم دیا ہے۔ذرائع وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ سزائے موت کے قانون کو ختم کرنے کے لئے پاکستان پر یورپی یونین کا بھی دباوٴ ہے،یورپی یونین نے پاکستانی برآمدات کو ترجیحی اسٹیٹس دینے کے لئے سزائے موت ختم کرنے کی شرط رکھی ہے۔

سُوۡرَةُ البَقَرَة

أَلَمۡ تَرَ إِلَى ٱلَّذِى حَآجَّ إِبۡرَٲهِـۧمَ فِى رَبِّهِۦۤ أَنۡ ءَاتَٮٰهُ ٱللَّهُ ٱلۡمُلۡكَ إِذۡ قَالَ إِبۡرَٲهِـۧمُ رَبِّىَ ٱلَّذِى يُحۡىِۦ وَيُمِيتُ قَالَ أَنَا۟ أُحۡىِۦ وَأُمِيتُ‌ۖ قَالَ إِبۡرَٲهِـۧمُ فَإِنَّ ٱللَّهَ يَأۡتِى بِٱلشَّمۡسِ مِنَ ٱلۡمَشۡرِقِ فَأۡتِ بِہَا مِنَ ٱلۡمَغۡرِبِ فَبُهِتَ ٱلَّذِى كَفَرَ‌ۗ وَٱللَّهُ لَا يَہۡدِى ٱلۡقَوۡمَ ٱلظَّـٰلِمِينَ (٢٥٨)

بھلا تم نے اس شخص کو نہیں دیکھا جو اس (غرور کے) سبب سے کہ خدا نے اس کو سلطنت بخشی تھی ابراہیم سے پروردگار کے بارے میں جھگڑنے لگا۔ جب ابراہیم نے کہا میرا پروردگار تو وہ ہے جو جلاتا اور مارتا ہے۔ وہ بولا کہ جلا اور مار تو میں بھی سکتا ہوں۔ ابراہیم نے کہا کہ خدا تو سورج کو مشرق سے نکالتا ہے آپ اسے مغرب سے نکال دیجیئے (یہ سن کر) کافر حیران رہ گیا اور خدا بےانصافوں کو ہدایت نہیں دیا کرتا (۲۵۸)

dykeye Namrood apny aap ko Khuda hony ka dawa tou nehe kar raha agr aisa hota tou wo apni saltanat mein butoon ki puja kiun karny dyta (jo baad mein Hazrat Ibraheem (AS) ne tory thy), tou phir Namrood se kia ghalti ho rahi thi?? us se ghalti ye ho rahi thi wo khudai ikhtiyar ka dawa kar raha tha, kia does hain kia don’ts hain, kia jaiz hai kia na jaiz hai yeh khudai ikhitiyar hain.

Aaj insaan khudai ikhtiyar ka daway dar ban gia hai. Phely namrood ya firoon ikaila howa karta tha aaj hai popular sovereignty, human sovereignty.

Iss se pehly keh ham Nawaz Shareef ky bary mein bura soochain hamain apny gariban mein jahnk lyna chaye, Namrood ki tarah ham mein se har admi ko Allah ne saltanat dy raky hai apny karobar ki saltanat, apny ghar ki saltanat atleat apny nafs ki tou hai he.

Please correct me if I am wrong, JazakALLAH

Tariq Mehmood
[email protected]