جرمنی سے پی آئ اے کی فلایٹس بند

Posted on July 20, 2013



فرینکفرٹ جرمنی(ایم اے مرزا) باخبر زرایع سے معلوم ہوا ہے کے پی آئ اے نے فرینکفرٹ جرمنی کے علاوہ یورپ کے مختلف روٹس جن میں بارسلونا سپین، ایمسٹرڈیم ہالینڈ، سے ستمبر کے اوائل میں اپنی فلائٹس بند کرنے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے اور بکنگ بھی صرف اگست کے آخرتک کی جارہی ہے اس کی وجوہات بتاتے ہوے بتاتے ہوے کہاگیا ہے کہ ایر لائن کے یہ روٹس کافی نقصان میں جارہے تھے جس کا تخمینہ کھربوں روپے سالانہ ہے ۔ پی آئ اے کا ایک جہاز جب پاکستان کے کسی ائرپورٹس سے اُڑتا ہے تو اُس کا خرچہ 45000 روپیہ فی گھنٹہ سے شروع ہو جاتا ہے اس پر کریو اور جہاز کے کپتان کی انشورنس ،ہوٹلوں کے خرچے سٹاف کے ٹی اے ڈی اے ۔جہاز کی بیرون ملک ایک لینڈنگ کا خرچہ 10000یورو اور اُ س پر کاؤنٹر کا2000 یورو اضافی چارج ہو تا ہے جو پی آئ اے کے لیے ان حالات میں پو را کرنا بھت زیادہ مشکل ہو گیا تھا۔ ایک فلائٹس میں جب تک 80سے زائد مسافر سفر نہ کرے فلائٹس اپنا خرچہ ہی پورا نہیں کر سکتی اور یہ تعداد صرف ہائ سیزن میں ہی ہوتی ہے آف سیزن میں مسافروں کی تعداد نمشکل 30یا کبھی 50تک ہی پہنچ پاتی تھی جس کی وجہ سے پی آئ اے کی مینجمنٹ نے نقصان میں جانے والے روٹس بند کرنے کا اصولی فیصلہ کیا ہے مزید بتایا گیا ہے کہ بند کیے جانے والے روٹس پر اسٹاف کو بھی فارغ کر دیا جاے گا اور دفاتر بھی بند کر دیے جاے گے تاکہ ائر لائن کو اضافی نقصان سے بچایا جا سکے
(اُردولائن)

http://www.urduline.com/?p=93671